Nomination request for Golden Residence in UAE

یو اے ای گولڈن ویزہ کی شرائط و ضوابط اور اپلائی کرنے کا طریقہ کار

دبئی ( یو اے ای اردو ( 12 ستمبر 2021 – ارشد فاروق بٹ) سال 2019 سے متحدہ عرب امارات سرمایہ کاروں اور غیر معمولی صلاحیتوں کے حامل دنیا کے بڑے دماغوں کو اپنی طرف راغب کرنے کے لیے طویل مدتی ریزیڈنشل ویزوں کا ایک نیا نظام متعارف کرا رہا ہے. جس میں گرین ویزہ اور گولڈن ویزہ غیر ملکیوں کے لیے سب سے زیادہ پرکشش ثابت ہوا ہے.

یو اے ای گولڈن ویزہ کی شرائط و ضوابط

متحدہ عرب امارات کی جانب سے جاری کردہ گولڈن ویزہ کی دو قسمیں ہیں. جن میں 10 سال یا 5 سال کے لیے گولڈن ویزہ جاری کیا جاتا ہے. گولڈن ویزہ کی دونوں اقسام کی شرائط مختلف ہیں. یہ ویزہ سرمایہ کاروں، کاروباری افراد، سائنس اور ایجوکیشن کے مختلف شعبوں میں خصوصی قابلیت رکھنے والے محققین اور غیر معمولی صلاحیتوں کے مالک طلبا کو جاری کیا جاتا ہے.

10 سالہ گولڈن ویزا کے لیے اہلیت کا معیار اور شرائط و ضوابط

1. سرمایہ کار
متحدہ عرب امارات میں کم از کم 10 ملین درہم کی سرمایہ کاری کرنے والے افراد 10 سالہ گولڈن ویزا کے لیے درخواست دینے کے اہل ہیں۔ ان کی جانب سے کی گئی سرمایہ کاری کئی طرح کی ہو سکتی ہے مثلا انہوں نے کوئی کمپنی قائم کر رکھی ہو یا وہ کسی کمپنی میں شراکت دار ہوں.

درخواست دہندہ نے متحدہ عرب امارات میں جتنی سرمایہ کاری کر رکھی ہو وہ قرض سے نہ ہو اور اس کی مالی حیثیت اتنی ہو کہ وہ اس سرمایہ کاری کو کم از کم تین سال تک برقرار رکھنے کی پوزیشن میں ہو. اس صورت میں گولڈن ویزے کی اہلیت میں میاں بیوی اور بچے ، ایک ایگزیکٹو ڈائریکٹر اور ایک مشیر شامل ہو سکتے ہیں۔

2. خصوصی صلاحیتوں کے حامل افراد
خصوصی صلاحیتوں کے حامل افراد بھی 10 سالہ گولڈن ویزا کے لیے درخواست دینے کے اہل ہیں۔ اس میں سائنس اور ایجوکیشن کے شعبوں میں ماہرین اور محققین شامل ہیں. جیسے ڈاکٹرز ، ماہرین ، سائنسدان ، موجد ، نیز ثقافت اور فن کے تخلیقی میدان میں کامیاب افراد.

اس صورت میں گولڈن ویزے کی اہلیت میں خصوصی صلاحیتوں کے حامل افراد کے ساتھ ساتھ ان کی فیملی بھی اہل ہوگی. ایسے افراد کو متحدہ عرب امارات میں ترجیح کے مخصوص شعبوں میں ملازمت کے درست معاہدے کا تعین کرنا ہوگا۔

5 سالہ گولڈن ویزا کے لیے اہلیت کا معیار اور شرائط و ضوابط

1. پراپرٹی سرمایہ کار اور کاروباری افراد
متحدہ عرب امارات میں کسی پراپرٹی میں سرمایہ کاری کرنے والے اور کاروباری افراد جنہوں نے 5 ملین درہم کی سرمایہ کاری کر رکھی ہو، 5 سالہ گولڈن ویزا کے لیے درخواست دینے کے اہل ہیں۔ تاہم ان کے لیے ضروری ہے کہ سرمایہ کاری کے لیے اتنی ہی رقم قرض کی صورت میں نہ لے رکھی ہو.

2. خصوصی صلاحیتوں کے حامل طلبا
خصوصی صلاحیتوں کے حامل طلبا بھی 5 سالہ گولڈن ویزا کے لیے درخواست دینے کے اہل ہیں۔ ان کے لیے ضروری ہے کہ انہوں نے سرکاری یا پرائیویٹ سیکنڈری سکولوں میں کم از کم 95 فیصدگریڈ کے ساتھ نمایاں اسناد حاصل کر رکھی ہوں۔ علاوہ ازیں ملک کے اندر اور باہر یونیورسٹی کے طلباء گریجویشن کے بعد کم از کم 3.75 کا امتیازی جی پی اے رکھتے ہوں.

یو اے ای گولڈن ویزہ کے لیے اپلائی کرنے کا طریقہ کار

متحدہ عرب امارات کے 10 سالہ یا 5 سالہ گولڈن ویزہ کے لیے اپلائی کرنے کے فیڈرل اتھارٹی برائے شناخت و شہریت یو اے ای کی ویب سائٹ پر ایک نامینیشن یوزر مینول موجود ہے جس میں اپلائی کرنے کا طریقہ کار تفصیل سے دیا گیا ہے. اسے ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں.

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ ویزہ گائیڈ اور اردو نیوز کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے