پاکستانی ایسوسی ایشن دبئی کی جانب سے بچوں میں عید الفطر کے تحائف کی تقسیم

دبئی (یو اے ای اردو – ارشد فاروق بٹ) عیدالفطر اس بار چھ سو سے زائد پاکستانی بچوں کے لیے جلد آ گئی جنہیں سنیچر کے روز پاکستان ایسوسی ایشن دبئی کی جانب سے تہوار سے پہلے مختلف تحائف دیے گئے۔

پاکستانی خاندانوں نے عود میتھا میں پی اے ڈی سینٹر کا دورہ کیا، جہاں تحائف کی تقسیم ہوئی۔

پاکستانی بچوں نے اپنے لیے وہ انتخاب کیا جو وہ چاہتے تھے۔ ہاتھ میں نئے کپڑے، کلائی گھڑیاں، تعلیمی سامان اور کھلونے تھے۔

زرین کے خاندان نے انٹرنیشنل سٹی سے عود میتھا تک کا سفر کیا۔ ان کے بچوں نے گلابی لباس اور کھلونا کاروں کا انتخاب کیا۔

ان کے والدین نے کہا: "جب ہم عید کے موقع پر فجیرہ میں کیمپ لگانے جائیں گے تو یہ نئے کھلونے ساتھ لے کے جائیں گے۔”

پاکستان ایسوسی ایشن دبئی کی فلاحی ٹیم کے ڈائریکٹر رضوان فینسی نے بتایا: "پیڈ نے چھوٹے خوابوں اور خواہشات کو پورا کرنے کے لیے تقریب کا اہتمام کیا۔”

انہوں نے کہا کہ تحفہ دینا پیڈ کی جانب سے سالانہ رمضان سرگرمیوں میں تازہ ترین اضافہ ہے جس میں دبئی بھر میں افطار کھانے اور رمضان پیکجز کی تقسیم شامل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پیڈ قیدیوں کی رہائی کی حمایت میں بھی پیش پیش ہے۔

پی اے ڈی کے ایک رضاکار 18 سالہ ہدا نے کہا: "بچوں کو مسکراتے ہوئے دیکھنا اور تحائف لینے کے بعد ان کے چہرے روشن ہوتے دیکھنا بہت ہی شاندار تجربہ تھا۔”

دریں اثنا، پی اے ڈی نے اس سے قبل ’آرٹ فار اے کاز‘ کے نام سے ایک آن لائن آرٹ نیلامی کا انعقاد کیا، جس میں 45 سے زیادہ فن پارے کامیابی سے فروخت ہوئے۔

پی اے ڈی کے مطابق، نیلامی سے حاصل ہونے والی تمام آمدنی پاکستان میڈیکل سینٹر میں ضرورت مند مریضوں کے لیے مفت صحت کی دیکھ بھال کی فراہمی کے لیے استعمال کی جائے گی۔

پی اے ڈی کے سکریٹری جنرل محسن البنا نے کہا: ” نیلامی کے شاندار نتائج دیکھ کر بہت خوشی ہوئی، جو اس مقدس مہینے کے دوران ایک نیک مقصد کے لیے منعقد کی گئی تھی۔ ہماری طاقت واقعی ہماری کمیونٹی میں ہے کیونکہ لوگ سب کے لیے مفت صحت کی دیکھ بھال کی حمایت کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آن لائن نیلامی متحدہ عرب امارات میں مقیم کمیونٹی فنکاروں کو فروغ دینے کا بھی ایک موقع تھا۔

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ ویزہ گائیڈ اور اردو نیوز کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔