pakistanies in qatar

پاکستان ایسوسی ایشن قطر کے زیر انتظام لیکچر ۔۔۔۔بعنوان’’Time !! mystery unfolded ‘‘

رپورٹ: مراد علی شاہد دوحہ قطر

urdu columns

پاکستان ایسو سی ایشن قطر کو دوحہ کی تمام ادبی تنظیموں میں انفرادیت خاص اس بنا پر بھی ہے کہ اس تنظیم کا نقطہ ارتکاز محض مشاعروں تک محدود نہیں بلکہ مختلف فیملی پروگرامز،نوجوانوں میں سیلف ڈیفنس کی تکنیک پیدا کرنے کے لئے کراٹے کلاسز کا باقاعدگی سے انعقاد،شاعروں کی حوصلہ افزائی کے ساتھ مشاعروں کا بھی انعقاد ہے۔ادب اور تمام اصناف ادب کی مکمل آبیاری کے مشن پر عمل پیرا پاکستان ایسوسی ایشن قطر نے سکول و کالج کے طلبہ و طالبات کے لئے خصوصاً ترین اور محبان علم کے لئے خصوصاً ایک لیکچر کا اہتمام کیا جسے معروف تشویقی،تحریکی اور تعلیمی ٹرینر اسامہ محمد نے پیش کیا۔
پروگرام کا آغاز تلاوت قران سے ہوا جس کی سعادت احمد رضا کو حاصل ہوئی۔تفصیلی اور اسامہ محمد کی تنظیمی و تعلیمی خدمات کا تعارف ایسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری مراد علی شاہدؔ نے پیش کیا جبکہ دیگر انتظام و انصرام سید فہیم الدین ،تجمل آفتاب چیمہ،شاہد رفیق اور محمد فاروق جدون نے سنبھالے۔اسامہ محمد عرصہ چودہ سال سے دوحہ کی ایک آئل کمپنی اوریکس جی ٹی ایل میں بطور سینئر پروڈکشن اپنے فرائض منصبی سر انجام دے رہے ہیں۔لیکچر کا پر کشش عنوان تھا “time !!!mystery unfolded”۔عنوان سے بھی پر کشش طریقے سے اسامہ محمد نے جس سہل فہمی،آسان اردو اور انگریزی میں سامعین کو علم کی دولت سے مالا مال کیا ۔

pakistan

اس کا تذکرہ خاص اس لئے ضروری ہے کہ ایک اچھے سپیکر کی خوبی ہوتی ہے کہ وہ ہرقسم اذہانِ قابلیت کے حامل افراد کو ساتھ لے کر چلتا ہے۔یہی وجہ تھی کہ بچوں سے لے کر بڑی عمر کے افراد نے بھی انہماک اور دلچسپی کا ثبوت دیتے ہوئے بہت سے نئے سوالات کئے جس نے سائنس اوراسلام کی بہت سی نئی جہتوں اور چھپے پہلوٗوں کو آشکار کیا۔ایٹم،مادہ،پروٹون،نیوٹن،آئن سٹائن تھیوری سے لیکر بگ بینگ کی تھیوری کو قرآن مجید کی مختلف آیات سے ثابت کیا کہ کس طرح قرآن تخلیقِ کائنات کے رازوں کو ہم پہ آشکار کرتا ہے۔اور جدید فزکس کے جدید قوانین اور تحقیقی مقالات آج اس بات کے شواہد ہیں کہ مطلق العنان ذات اور علم ،ماسوا ذات برحق اور عالمگیر،آفاقی الہامی کتاب قرآن کے کوئی نہیں ۔اور قرآنی آیات سے ہی ثابت کیا کہ وقت کیا ہے ؟یہ کب شروع ہوا؟کائنات کے سر بستہ رازوں کو کس طرح ’’وقت‘‘ آشکار کرتا ہے؟

chichawatni

زمان و مکاں کیا ہے،ہم اپنے ماضی و حال و مستقبل کا تعین کیسے وقت کے پیرائے میں کر سکتے ہیں،وقت کیسے رک جاتا ہے،اور سب سے دلچسپ کہ کیسے آنحضور ﷺ جب معراج پہ تشریف لے گئے تو وقت ٹھہر گیا اور آپ ﷺ نے کیسے مستقبل کا آپنی آنکھوں سے مشاہدہ کیا اور لیکچر کا یہی حصہ سب سے دلچسپ اور معلوماتی تھا،انہوں نے یہ بھی بتایا کہ واقعہ معراجﷺ کو کس طرح سائنس درست ثابت کرتی ہے؟۔ا ختتامی کلمات ادا کرتے ہوئے تجمل آفتاب چیمہ سرپرست ایسوسی ایشن نے مہمانان کا خصوصاً سکول و کالج کے بچوں کی شمولیت کو سراہا اور ادب نواز محبان اردو کا شکریہ ادا کیا اور مستقبل میں ایسے پروگرامز کے انعقاد کا عہد بھی کیا ۔تاکہ ہماری نوجوان نسل میں تعلیم و تحقیق،شعور آ گہی بیدار ہو اور وہ اعلیٰ تعلیمی معیار کے ساتھ ملک و قوم کی بہتری و ترقی میں اپنا کردار ادا کر سکیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں