URDU DUBAI

اخبارات اور ٹی وی چینلز کی موجیں ختم، حکومتی اشتہارات کی نئی پالیسی متعارف

اسلام آباد (یواےای اردو) وفاقی حکومت نے اخبارات ، ٹی وی چینلز اور ڈیجٹل اشتہارات کیلئے نئی پالیسی متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت تمام حکومتی اشتہارات کا اختیار پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ ( پی آئی ڈی ) کو دے دیاگیا ہے، وفاقی حکومت کے زیرا نتطام وفاقی وزارتوں ، ڈویژنز ، خودمختار ادارے اور کارپوریشنز صرف اور صرف پی آئی ڈی کے ذریعہ اشتہارات دے سکیں گے.

پالیسی کی مزید تفصیلات کے مطابق علاقائی اخبارات کا 25 فیصد کوٹہ ختم کردیا گیا ہے اور اخبارات اور ٹی وی چینلز کیلئے اشتہارت ایڈوائزنگ ایجنسی کے ذریعے جاری نہیں ہونگے بلکہ پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ براہ راست اشتہارات جاری کرے گی، اخبارات کی تین نئی کیٹگریاں متعارف کرادی گئیں ہیں اور حکومتی جماعت پارٹی اشتہارات کیلئے پبلک فنڈز استعمال نہیں کرسکے گی.

پالیسی کے مطابق ٹی وی چینلز کے اشتہارات کے نرخ بھی دوبارہ طے ہونگے جو کہ اس نئی پالیسی کے وفاقی کابینہ سے منظور ہونے کے بعد 30 دن کے اندر جاری کردیئے جائیں گے. علاوہ ازیں ٹی وی چینلز کی ریٹنگ کیلئے ایجنسی کا تعین پیمرا کی منظوری سے کیا جائے گا.

نئی مجوزہ ڈرافٹ پالیسی کو پانچ ابواب میں تقسیم کیا گیا ہے جس میں تعارف ، پالیسی کے مقاصد ، نگران وعملدرآمد کمیٹی (اوآئی سی ) ،
اشتہارات کی اقسام اور عام ہدایات شامل ہیں۔ اشتہارات کی یہ پالیسی پہلی دفعہ 1966میں لاگو کی گئی تھی لیکن بعد میں آنے والی مختلف حکومتوں نے1980, 1983اور 2003 میں تبدیلیوں کے ساتھ جاری کیا تھا.

پالیسی کے مقاصد میں چار بنیادی نکات پر زور دیا گیا ہے جوکہ تمام حکومتی اداروں کی رہنمائی اور ہدایت کیلئے فریم ورک کے طور کام کرے گی تاکہ وہ اشتہارات کیلئے حکومتی فنڈز کا صحیح استعمال کرسکیں. اس پالیسی کے لاگو ہونے کے بعد من چاہے صحافیوں اور صحافتی گروپوں کو نوازنا تقریبا ناممکن ہو جائے گا.

اپنا تبصرہ بھیجیں