uae news

سفری شرائط : گزشتہ روز دبئی آنے والے ایک مسافر کا سفری احوال پڑھئے

تحریر : راجہ علی شان

آج امارات واپسی ہوئی ہے۔ کرونا سے متعلق نئی سفری شرائط و ضوابط کے بارے میں اپنا ذاتی تجربہ آپ احباب کی خدمت میں پیش کررہا ہوں۔

اگر آپ پاکستان سے امارات واپس آرہے ہیں تو منفی کرونا ٹیسٹ سے مستثنیٰ صرف اسی صورت میں ہوسکتے ہیں اگر آپ مکمل ویکسین شدہ ہیں۔

یہاں مکمل ویکسین شدہ ہونے سے مراد یعنی آپ امارات کے ریزیڈنسی ویزہ کے حامل ہیں اور یہاں سے ویکسین لگوا چکے ہیں تو الہوسن ایپ کا سرٹیفکیٹ دکھانا لازمی ہوگا۔

اب مکمل ویکسین شدہ ہونے کی تعریف کیا ہے؟

یعنی آپ نے دو بار Moderna یا Pfizer لگوائی ہے یا پھر دو بار Senopharm اور اسکے بعد دو بار Pfizer بطور بوسٹر ڈوز لگوائی ہے۔

اگر آپ ویکسین شدہ ہونے کی شرائط پر پورا نہیں اترتے تو پھر آپکو پی سی آر کرونا ٹیسٹ لازمی کروانا ہوگا جو روانگی سے پہلے 48 گھنٹے تک مستعمل ہو۔

ہوائی اڈے پر دورانِ بورڈنگ آپ سے متعلقہ ہوائی کمپنی کا عملہ ویکسین کارڈ یا کرونا کا ٹیسٹ طلب کرے گا۔ GDRFA یا ICA اجازت نامہ طلب نہیں کیا جارہا لیکن پھر بھی بطور احتیاط وہ بھی ساتھ رکھ لیں۔

دبئی اتر کر آپ سے پھر ویکسین کارڈ یا کرونا ٹیسٹ طلب کیاجائے گا۔

سوال: کیا پاکستانی ویکسین کارڈ پر بھی یہی شرائط لاگو ہوں گی؟

جواب : جی بالکل بشرطیکہ آپ کے کارڈ پر کیو آر کوڈ موجود ہو تاکہ بوقت ضرورت تصدیق کی جاسکے۔

ساری تحریر کا لبِ لباب یہ ہے کہ میں بغیر کرونا ٹیسٹ کیے دبئی واپس آیا ہوں کیوں کہ میں ویکسین شدہ ہوں۔ اسکے علاوہ ریپڈ ٹیسٹ بھی حتم کردیا گیا ہے۔

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ ویزہ گائیڈ اور اردو نیوز کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔