Workers and Arbab in Dubai

اماراتی ارباب اگر بلیک لسٹ کرنے کی دھمکی دے تو کیا کرنا چاہئے – UAE URDU

دبئی (یو اے ای اردو – 15 جون 2021 – ارشد فاروق بٹ) ہمارے فیس بک پیج پر موجود ایک ممبر ارسلان صفدر نے یہ سوال بھیجا ہے. اس کی کہانی اسی کی زبانی:

“بھائی میں اس وقت دوبئی میں ہوں ایک ارباب کے ساتھ، 900 درہم مجھے تنخواہ دے رھا ہے اور مجھے ایک کمپنی سے 2800 درہم تنخواہ کی آفر ہوئی ہے کیوں کہ میرے پاس بس کا ڈرائیونگ کا لائسنس بھی ہے جو کہ میں نے ایک سال پہلے لیا تھا. اس ارباب کے ساتھ مجھے تین سال سے زیادہ کا عرصہ گزر چکا ہے. اب جب مجھے دوسری کمپنی سے آفر ہوئی ہے تو میرا ارباب نہ مجھے چھوڑتا ہے اور نہ پیسے لیتا ہے. آپ بھائیوں سے مشورہ درکار ہے. ارباب کہتا ہے اگر تم گئے تو میں تمھیں بلیک لسٹ میں ڈال دوں گا. برائے مہربانی اس پریشانی میں مجھے آپ کے مشورے کی ضرورت ہے.

ہم ایڈمنز کا مشورہ:
اس کا قانونی حل یہ ہے کہ آپ اپنے ارباب یا (ایچ آر) کو استعفی کی ایک آفیشل ای میل سینڈ کریں یا اس کے وٹس ایپ پہ یہ استعفی بھیج دیں. اس میں آپ لکھیں کہ میں اس تاریخ سے نوکری چھوڑنا چاہتا ہوں اور میرا نوٹس آج سے شروع ہے. اس کے بعد 30 دن انتظار کریں. ارباب 30 دن تک اس ای میل پر عمل کا پابند ہے.

اگر آپ کے ذمے کوئی رقم واجب الادا نہیں ہے اور بقایا جات کھاتہ کلیئر ہے تو پھر آپ کے لیے پریشانی کی کوئی بات نہیں ہے. تاہم بعض ارباب ذاتی عناد کی بنا پر بقایا جات ڈالنے کی کوشش کرتے ہیں. اس صورت میں بھی اگر وہ آپ کو بلیک لسٹ بھی کر دے تب بھی آپ اپنی ای میل کے پروف کے ساتھ لیبر کورٹ کا دروازہ کھٹکھٹا سکتے ہیں. اور ارباب کو اچھی خاصی پریشانی میں ڈال سکتے ہیں. اگر آپ اپنا مؤقف لیبر کورٹ میں درست ثابت کردیں تو ارباب کو ہزاروں درہم جرمانہ ہو گا اور وہ آپ کے قدموں میں ہو گا.

ورکرز کو بلیک لسٹ کرنا اتنا آسان نہیں ہے جتنا ورکرز سمجھتے ہیں. ارباب کے پاس ٹھوس وجہ ہو تو ہی بلیک لسٹ کر سکتا ہے. بلیک لسٹ کی دھمکی کو اکثر ارباب ورکرز کو غلامی میں رکھنے کے لیے ایک ہتھکنڈے کے طور پر استعمال کرتے ہیں. لہذا پہلے اپنے اندر موجود غلام کو ماریں اور اللہ پر بھروسہ کریں، رازق وہی ذات ہے اور اپنے حق کے لیے ڈٹ جائیں.

امارات کے قوانین اتنے عجیب نہیں ہیں کہ ورکرز ان پہ بھروسہ نہ کرے. یہاں ارباب کے ساتھ ساتھ ورکرز کو بھی معاشی تحفظ حاصل ہے. متحدہ عرب امارات میں آفیشل ای میل کی ایک لیگل ویلیو ہے اور ارباب کچھ نہیں کر سکتا. اس لیے اگر آپ کمپنی کے کیش کو ہینڈل نہیں کرتے تو پھر آپ کے لیے ارباب سے جان چھڑانا بہت آسان ہے. اگر آپ کاؤنٹس کے شعبے میں ہیں اور کمپنی کا کیش ہینڈل کرتے ہیں تو کھاتہ جات مکمل کلیئر کریں.

امید ہے آپ کو سوال کا جواب مل گیا ہو گا. ہم اپنے فیس بک پیج ، ٹویٹر اکاؤنٹ اور ویب سائٹ یو اے ای اردو پر موجود تمام ممبران کی معاونت کے لیے کوشاں ہیں. اگر آپ کو ہمارا کام اچھا لگے تو ہمیں سپورٹ کرنے کے لیے ہمارے فیس بک پیج پر Reviews کے سیکشن میں ایک Review ضرور لکھیں تاکہ نئے آنے والے ممبران بھی اعتماد کر سکیں. شکریہ.

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ ویزہ گائیڈ اور اردو نیوز کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے