uae news

کیا امارات میں داخلے کے لیے کووڈ ویکسین لگوانا ضروری ہے – UAE URDU

دبئی (یو اے ای اردو – 15 جون 2021 – ارشد فاروق بٹ) متحدہ عرب امارات کی حکومت نے کہا ہے کہ پاکستان اور بھارت سمیت چھ ممالک میں پھنسے ہوئے وہ تارکین وطن جن کو یو اے ای میں ویکسین کی دو خوراکیں لگی تھیں وہ متحدہ عرب امارات واپس آ سکتے ہیں۔

یو اے ای حکومت کے اس اعلان اور ایمریٹس ایئرلائن کی جانب سے جاری کی گئی ہدایات سے یہ بات اب وثوق سے کہی جا سکتی ہے کہ متحدہ عرب امارات اب ویکسین لگوائے بغیر کسی مسافر کو داخلے کی اجازت نہیں دے گا.

مسافروں کے لیے دیگر شرائط جن کی فہرست پہلے ہی جاری کی جاچکی ہیں وہ لاگو ہوں گی.

  1. انہیں متحدہ عرب امارات میں ویکسینیشن کی مکمل خوراکیں ملی ہوں۔
  2. ویکسین کی دوسری خوراک لیے کم از کم 14 دن گزر چکے ہوں گے۔
  3. ان کے پاس متحدہ عرب امارات کے حکام سے منظور شدہ ویکسینیشن سرٹیفکیٹ ہونا ضروری ہے۔
  4. مسافروں کے پاس کیو آر کوڈ کے ساتھ منفی کوویڈ 19 ٹیسٹ سرٹیفکیٹ ہونا ضروری ہے۔ ٹیسٹ آئی سی ایم آر سے منظور شدہ لیبارٹری میں روانگی کے 48 گھنٹوں کے اندر ہونا چاہیے۔
  5. مالیکیولر ڈائیگناسٹک ٹیسٹنگ پر مبنی ایک ریپڈ پی سی آر ٹیسٹ رپورٹ ہوائی اڈے پر روانگی کے چار گھنٹوں کے اندر حاصل کرنا لازمی ہے۔

واضح رہے کہ ابھی تک یو اے ای حکومت نے ایسے مسافروں کو داخلے کی اجازت کا اعلان نہیں جن کو پاکستان یا بھارت میں ویکسین کی دو خوراکیں لگی ہوں. یو اے ای دیگر ممالک کے ویکسین کے نظام کو محتاط انداز میں قبول کر رہا ہے.

پاکستان کے تمام ہوائی اڈوں پر ریپڈ کوویڈ 19 پی سی آر ٹیسٹ کی سہولت فراہم کر دی گئی ہے. یہ بات یاد رکھنی چاہیے کہ اگر کسی مسافر نے کوویڈ 19 ویکسین لگوائی ہو اور اس کا کوویڈ 19 ٹیسٹ پازیٹو آ جائے تب بھی وہ ٹریول نہیں کر سکتا.

ایڈیٹر سعد رمضان

سعد رمضان
سعد رمضان کرغیزستان میں میڈیکل کے طالب علم ہیں۔ یو اے ای اردو پر آپ صحت کی خبریں اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔