benefits of green visa

یو اے ای گرین ویزہ کیا ہے اور یہ آزاد یا ریزیڈنشل ویزے سے کس طرح مختلف ہے؟

دبئی ( یو اے ای اردو – 10 ستمبر 2021 – ارشد فاروق بٹ) متحدہ عرب امارات تیل پر انحصار کم کرنے اور معیشت کو فروغ دینے کے لیے مسلسل اقدامات اٹھا رہا ہے جس میں ایک اہم پیشرفت میں اماراتی سرزمین کو دنیا بھر کے امیر سرمایہ کاروں کے لیے کھول کر گرین ویزے کا اجراء کرنا ہے۔گرین ویزہ کو دوسرے لفظوں میں ہم آزاد ویزہ بھی کہہ سکتے ہیں۔ بلکہ یہ سہولتوں کے اعتبار سے آزاد ویزے سے بھی دو قدم آگے ہے۔

گرین ویزہ کے فوائد

  1. گرین ویزہ کے تحت سرمایہ کاروں کے مستقل رہائشی پروگراموں اور جائیداد کی ملکیت کے قوانین میں اصلاحات لائی گئی ہیں جس کے لیے سرمایہ کار بھاری معاوضہ ادا کرتے ہیں۔
  2. گرین ویزہ کا مقصد غیر ملکیوں کے لیے متحدہ عرب امارات میں روزگار کے مواقع کے حصول میں حائل رکاوٹوں اور پابندیوں کو کم کرنا ہے۔
  3. گرین ویزہ کے تحت غیر ملکیوں کو متحدہ عرب امارات میں بغیر کسی آجر کی کفالت کے کام کرنے کی اجازت ہوگی۔ اس سے قبل کوئی بھی ورکر آجر کے بغیر کام نہیں کر سکتا تھا۔ آجرورکر کے لیے منسٹری آف ہیومن ریسورس اینڈ ایمریٹائزیشن سے ورک پرمٹ لیتا تھا۔
  4. گرین ویزہ ہولڈرز اپنے والدین کی کفالت یعنی ان کو سپانسر کر سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ بچوں کو سپانسر کرنے کے لیے عمر کی حد میں چھوٹ بھی شامل ہے۔
  5. گرین ویزہ ہولڈرز کو تیس دن کی بجائے 3 ماہ کی رعایتی مدت یعنی گریس پیریڈ دیا جائے گا ۔ سابقہ پالیسی کے تحت اگر کسی ملازم کو نوکری سے نکال دیا جاتا تو وہ ملک چھوڑنے کے لیے صرف 30 دن کا وقت رکھتا تھا۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے جب متحدہ عرب امارات ویزہ ٹائپس اور ان میں تبدیلیوں کا اعلان کیا ہو، دو سال قبل بھی متحدہ عرب امارات نے 10 سالہ "گولڈن ویزہ” لانچ کیا تھا جس کا مقصد امارات میں دنیا بھر کے امیر شہریوں، سرمایہ کاروں، ڈاکٹروں اور ہنر مند افراد کا استقبال کرنا ہے۔

گرین ویزے کا نفاذ کب ہو گا اور اس کے لیے درخواست دینے کا طریقہ کار ابھی واضح نہیں ہے تاہم بہت جلد اس کی تمام تفصیلات منظر عام پر آ جائیں گی۔

Guest Post on High Authority Website with Dofollow Backlink

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ ویزہ گائیڈ اور اردو نیوز کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے