visa expired dubai

اگر سفری پابندیاں ختم ہونے سے قبل آپ کا اقامتی ویزہ ایکسپائر ہو رہا ہے تو کیا کرنا چاہیے؟

دبئی ( یو اے ای اردو – 15 جولائی 2021 – ارشد فاروق بٹ) پاکستان میں موجود بہت سے مسافر جن کے پاس متحدہ عرب امارات کا ورک ویزہ ہے، پروازیں بند ہونے سے سخت پریشان ہیں۔ کچھ کا ویزہ پروازیں کھلنے سے پہلے اسی مہینے جولائی میں ایکسپائر ہو رہا ہے۔ ان مسافروں کے پاس کیا کوئی آپشن ہے؟

سال 2020 میں یہی مسئلہ بہت سے پاکستانی مسافروں کو درپیش تھا جن کے پاس یو اے ای کا اقامتی یا وزٹ ویزہ تھا۔ وبائی مرض کرونا کی وجہ سے مسافر پروازوں پر پابندی تھی جس کی وجہ سے کچھ لوگوں کے ویزے ایکسپائر ہو گئے تھے۔

اس مسئلے کے حل کے لیے متحدہ عرب امارات کی وفاقی اتھارٹی برائے شناخت اور شہریت (آئی سی اے) نے ایکسپائر ویزہ کے حامل پاکستانی شہریوں کو اضافی مدت دیتے ہوئے پابند کیا تھا کہ دیے گئے عرصے کے اندر اندر دبئی پہنچ جائیں۔

اب جبکہ سال 2021 ہے اوراس کالم کے شائع ہونے تک متحدہ عرب امارات نے پاکستان میں پھنسے ہوئے افراد کے لیے کسی اضافی مدت کا سرکاری طور پر اعلان نہیں کیا۔ اس صورتحال میں یا تو آپکو فلائٹس اوپن ہونے کا انتظار کرنا چاہئے اور متحدہ عرب امارات سے سال 2020 کی طرح کسی رعایتی اضافی مدت کی امید رکھنی چاہئے۔

دوسرا راستہ کرغیزستان یا دولت مشترکہ کے ممالک کے ذریعے دبئی جانے کا ہے جس پر آپ کو اضافی خرچ کرنا پڑے گا۔ بصورت دیگر آپ ویزہ کینسل کی درخواست دے سکتے ہیں تاکہ فلائٹس اوپن ہونے پر نیا ویزہ حاصل کرکے امارات جا سکیں۔

ویزہ کینسل کرانے کا طریقہ

ویزہ کینسل کرنے کے لیے آپ دبئی میں جنرل دائریکٹوریٹ آف ریزیڈنسی اینڈ فارن افیئرز سے رابطہ کرسکتے ہیں۔ ویزہ کینسل اس زمرے کے تحت کیا جائے گا کہ آپ یو اے ای سے باہر ہیں اور پروازیں بند ہونے کے باعث واپس نہیں آ سکتے۔

ویزہ کینسل یا توسیع کرانے کے لیے آپ اپنے سپانسر یا کمپنی سے رابطہ کر سکتے ہیں. حال ہی میں دبئی حکومت نے پاکستان میں پھنسے تارکین وطن کو ویزہ کینسل کرانے یا توسیع کرانے کی اجازت دے دی ہے.

ایڈیٹر ارشد فاروق

ارشد فاروق
ارشد فاروق بٹ کالم نگار اور بلاگر ہیں۔ یو اے ای اردو ویب سائٹ پر آپ خبروں کی کیٹیگری اپڈیٹ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے